پنجاب میں گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کو جدید سیکورٹی فیچرڈسے آراستہ نمبر پلیٹوں کی فراہمی، محکمہ ایکسائز اور این آر ٹی سی میں معاہدہ:

پنجاب میں گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کو جدید سیکورٹی فیچرڈسے آراستہ نمبر پلیٹیں فراہم کی جائیں گی-محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن پنجاب اور نیشنل ریڈیو اینڈ ٹیلی کمیونیکیشن کارپوریشن کے درمیان آج معاہدے پر دستخط ہو گئے-وزیر اعلی آفس میں منعقدہ تقریب میں نمبر پلیٹس کی سپلائی کے معاہدے پر دستخط کئے گئے -وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار تقریب کے مہمان خصوصی تھے-محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن پنجاب کی جانب سے ایڈیشنل ڈی جی راو شکیل الرحمن اور این آر ٹی سی کے جی ایم مارکیٹنگ سید عامر نے معاہدے پر دستخط کئے-وزیر اعلی عثمان بزدار نے کہا کہ گاڑیوں کی سکیورٹی فیچرڈ اور اسٹینڈرڈائز نمبر پلیٹس کی فراہمی کا مسئلہ خوش اسلوبی سے حل کرلیا گیا ہے-جی ٹو جی بنیاد پر ہونے والا یہ معاہدہ نمبرپلیٹس کی سپلائی اور اجراء کے مسئلے کا طویل المدتی حل ثابت ہوگا اورقیمتی زرمبادلہ کی بچت کے ساتھ یہ معاہدہ عوام کے لئے معیاری سہولت کا باعث بنے گااور سیف سٹی کے کیمروں کے ذریعے نمبرپلیٹس کی شناخت ممکن ہو گی-انہوں نے کہا کہ گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کے مالکان کو جلد نمبر پلیٹس ان کی دہلیز پر فراہم کی جائیں گی-انہوں نے کہا کہ پنجاب بھر میں ایک ہی طرز پر موٹر وہیکل رجسٹریشن بذریعہ یونیورسل رجسٹریشن سیریز کا آغاز کیا گیا اور پرکشش نمبروں کی نیلامی کے عمل کو آن لائن کر دیا گیا ہے- محکمہ ایکسائز کے تمام بنیادی ٹیکسز کی آن لائن ادائیگی بذریعہ ای پے کا آغاز کیا گیاہے- رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی میں 5 ارب سے زائد کا ریونیو بذریعہ ای پے حاصل ہوا-رجسٹریشن اور دیگر امور کے سلسلے میں دفاتر آنے والے درخواست گزاروں کے لئے آن لائن اپوائنٹمنٹ مینجمنٹ سسٹم کا بھی پنجاب بھر میں آغاز کیا گیا ہے اور عوام کو اس سسٹم کے ذریعے دفاتر میں انتظار اور قطار کی زحمت سے بچا لیا گیا ہے-انہوں نے کہا کہ موٹر وہیکل رجسٹریشن کے لئے بائیو میٹرک تصدیق کے عمل کا بھی جلد آغاز کردیا جائے گا-گورنمنٹ اداروں میں شفافیت کے ذریعے عوامی سہولت پیدا کرنا حکومت کی اولین ترجیح رہی ہے- گاڑیوں کی سکیورٹی فیچرڈ اور اسٹینڈرڈائز نمبر پلیٹس قانون کی عمل داری اور امن و عامہ قائم رکھنے کے لیے بنیادی اہمیت کی حامل ہے-انہوں نے کہا کہ دیگر مسائل کی طرح گاڑیوں کی نمبر پلیٹس کی فراہمی کا مسئلہ بھیہماری حکومت کو ورثے میں ملا-ہم نے اس مسئلہ کو حل کرنے کے لئے روایتی سوچ اور طریقوں سے ہٹ کر جی ٹو جی بنیادوں پر معاہدے کا فیصلہ کیااور اس سلسلے میں تمام قانونی امور کو پورا کیا گیا ہے- یہ معاہدہ حکومتی اداروں کی استعداد بڑھانے کے ساتھ ساتھ باہمی تعاون کو بھی فروغ دے گا- اس معاہدے کے ساتھ یقینا کثیر ملکی زرمبادلہ کی بچت ہوگی اور ہم اس سیکٹر میں جلد ایکسپورٹ کی صلاحیت بھی حاصل کر لیں گے-صوبائی وزیر ایکسائز و ٹیکسیشن حافظ ممتاز احمد، صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان، چیف سیکرٹری،ایم ڈی این آر ٹی سی بریگیڈئر توفیق احمد، سیکرٹری ایکسائز، متعلقہ افسران اور این آر ٹی سی کے حکام بھی اس موقع پر موجود تھے-

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com