ڈرٹی بوائے​ | محمد علم اللہ اصلاحی

ایک خاتون اپنے بچے کے ساتھ ریلوے پلیٹ فارم پر کھڑی ہوکر ٹرین کا انتظار کر رہی تھی۔ اتنے میں اس کے بچے نے اپنی ماں سے کچھ کھانے کے لیے مانگا۔​
خاتون نے جھٹ سے اپنا پرس کھولااور اس میں سے بسکٹ کا پیکٹ نکال کر بچے کو کھانے کے لئے دے دیا۔بسکٹ کھاتے کھاتے بچے کی نگاہ ریلوے لائن پر پڑی ، جہاں ایک بھکاری کا بچہ لوگوں کے پھینکی ہوئی گندگی، کوڑے کرکٹ میں سے کھانے کے سامان سے اٹھا اٹھا کر کچھ کھا رہا تھا۔​
یہ دیکھ کر بچے سے رہا نہ گیا، فوری طور پر ماں سے بولا:​
“موم موم ! دیکھو ادھر ایک بچے کو دیکھو!”​
بچہ کے کہنے پر ماں نے اس بھکاری بچے پر سرسری نگاہ ڈالی اور بچے سے کہا:​
“ہاں! کیا ہے؟ کچھ کھا رہا ہے، تو بھی اپنا بسکٹ جلدی finish کرو، ٹرین آنے والی ہوگی”​
بچہ۔​
موم!وہ نیچے سے اٹھا کر کھا رہا ہے، چھی چھی کھا رہا ہے ۔۔۔بچے کے کہنے پر ماں نے پھر اس بھکاری بچے کیجانب دیکھا اور ایک دم نفرت سے نگاہ پھیرتے ہوئے کہا:​
“oh shit! اس کی طرف مت دیکھو، وہ dirty boy ہے، چلو یہاں سے! کہیں اور جا کر کھڑے ہوتے ہیں it ’s disgusting “​

میں سوچ رہا تھا اصل میں گندگی کہاں ہے ۔۔۔۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com