لاہور کے بعد راولپنڈی میں ڈبل ڈیکر ٹورسٹ بس سروس کاآغاز، جلد بہاولپور، ڈیرہ غازی خان اور ملتان میں سروس شروع کرینگے

لاہور18دسمبر:  وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے ٹورازم فار اکنامک گروتھ پراجیکٹ کا آغاز کر دیا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ٹورازم فار اکنامک گروتھ پراجیکٹ کے تحت آج 90 شاہراہ قائداعظم پر صوبے میں 6 سیاحتی مقامات پر روڈ انفراسٹرکچر کو بہتر بنانے کے منصوبے کا سنگ بنیاد رکھا۔ یہ منصوبہ محکمہ پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ اور ورلڈ بینک کے اشتراک سے شروع کیا گیا ہے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے محکمہ پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ اور محکمہ سیاحت کے سٹالز کا بھی معائنہ کیا۔ وزیراعلیٰ کو سیکرٹری تعمیرات و مواصلات نے سیاحتی مقامات پر سڑکو ں کی تعمیر کے منصوبے کے بارے میں بریفنگ دی۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ورلڈ بنک اور پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ حکومت پنجاب کے اشتراک سے 83کروڑ روپے سے 6 سیاحتی مقامات پر روڈ انفراسٹرکچر کو بہتر بنایا جائے گا اور 35کلومیٹر طویل سڑکوں کی تعمیرو بحالی اور توسیع کے منصوبے پہلے مرحلے میں مکمل کئے جائیں گے۔ سالٹ رینج میں چکوال، خوشاب اور میانوالی پر مشتمل ٹورازم زون کو ڈویلپ کیا جارہاہے۔صوبے میں سیاحتی مقامات پر سہولتیں فراہم کرنے کا یہ پہلا مرحلہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ کوٹلی ستیاں، چکوال، جہلم، سون ویلی، میانوالی، اٹک، فورٹ منرو اور کوہ سلیمان میں نئے سیاحتی مراکز متعارف کرائے جا رہے ہیں۔ سیاحت کو فروغ دینے کیلئے اس طرح کے مزید منصوبے لائیں گے۔انہوں نے کہا کہ سیاحت وزیراعظم عمران خان کے دل کے بہت قریب ہے اور پنجاب میں کلچرل، مذہبی اور تاریخی سیاحت کا بہت پوٹینشل موجود ہے۔ پراجیکٹ کے دوسرے مرحلے میں کوٹلی ستیاں میں سیاحت کو فروغ دیں گے۔جہلم، ملتان، بہاولپور اور دیگر علاقوں میں سیاحت کو فروغ دینے کیلئے ضروری اقدامات کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ شاہی قلعہ لاہور اور دیگر تاریخی مقامات کی بحالی کیلئے 4 ارب روپے کی لاگت سے پروگرام جاری ہے۔پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت بھی سیاحتی مقامات کو ڈویلپ کریں گے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ صوبے میں 176 ریسٹ ہاؤس عوام کیلئے کھول دیئے گئے ہیں اور عوام ان ریسٹ ہاؤسز میں قیام کیلئے آن لائن بکنگ کرا سکتے ہیں۔سیاحت کے  فروغ کیلئے پنجاب میں پہلی مرتبہ سیاحتی پالیسی تشکیل دی گئی اور ٹورازم اتھارٹی قائم کردی گئی ہے۔ ٹورازم سٹیک ہولڈرز کو لائسنس کے آن لائن اجراء اور تجدیدکیلئے سافٹ ویئر بنایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ  چکوال میں متعدد جھیلیں ہیں، اس شہر کو لیک سٹی کے طورپر متعارف کرائیں گے۔ عوام کو سیروتفریح کی سہولت فراہم کرنے کیلئے پنجاب کے مختلف دریاؤں اور جھیلوں پر ریزارٹس قائم کئے جا رہے ہیں۔ تونسہ بیراج پر ریزارٹ زیرتعمیر ہے۔ واٹر سپورٹس کے ذریعے سیاحوں کو مزید اور منفرد تفریح مہیا کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ لاہور کے بعد راولپنڈی میں ڈبل ڈیکر ٹورسٹ بس سروس کاآغاز کردیا گیاہے اور بہت جلد بہاولپور، ڈیرہ غازی خان اور ملتان میں بھی ڈبل ڈیکر ٹورسٹ بس سروس شروع کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب میں ٹورازم کے حوالے سے بہت پوٹینشل ہے۔ پنجاب کو سیاحت کا مرکز بنائیں گے۔ دنیا میں پاکستان کا سافٹ امیج سیاحت کے ذریعے ہی متعارف کرایا جاسکتاہے۔ پاکستان کے سافٹ امیج سے سرمایہ کار یہاں آئیں گے اور سرمایہ کاری کریں گے۔ سیاحت کے فروغ کیلئے فنڈز کی کمی نہیں آنے دیں گے۔سیاحت کے فروغ کیلئے مزید محنت سے کام کرنا ہوگا۔ سیاحت کے ساتھ ثقافتی سرگرمیوں کو بھی پروموٹ کیا جائے گا۔ وزیراعظم کے معاون خصوصی سید ذوالفقار بخاری نے ویڈیو لنک کے ذریعے تقریب سے خطاب کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں سیاحت کے بے پناہ مواقع موجود ہیں جن سے بھرپور استفادہ کیا جا رہا ہے۔سیاحت اور معیشت کا چولی دامن کا ساتھ ہے۔ سیاحت کے فروغ سے معیشت بھی مستحکم ہوگی۔ کنٹری ڈائریکٹر ورلڈ بینکناجی بنہاسائن  (Mr. Najy Benhassine) نے ویڈیو لنک کے ذریعے تقریب سے خطاب کیا اور کہا کہ ورلڈ بینک سیاحت کے فروغ کیلئے پنجاب حکومت کے ساتھ تعاون جاری رکھے گا۔مشیر وزیراعلیٰ برائے سیاحت آصف محمود نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعلیٰ عثمان بزدار کی قیادت میں پنجاب کو ٹورازم حب بنانے میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھیں گے۔ صوبے میں سیاحت کے فروغ کیلئے پہلی بار عملی اقدامات کئے گئے ہیں۔ چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات حامد یعقوب نے پنجاب ٹورازم فار اکنامک گروتھ پراجیکٹ کے اہم خدو خال سے آگاہ کیا۔ سینئر وزیر عبدالعلیم خان، صوبائی وزیر میاں اسلم اقبال، معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان، عالمی بینک کے عہدیداران، اراکین اسمبلی اور اعلیٰ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com